Wednesday 18 September 2019
Home      All news      Contact us      Urdu
بی بی سی - 7 days ago

کشمیری لڑکی کی ڈائری: ’کیا کہیں کوئی کبوتر ہے جو میرا خط پہنچا دے۔۔۔‘

کشمیر میں کئی سال سے یہ روایت ہے کہ اگر کوئی لڑکا آنسو گیس یا چھرے یا گولی سے زخمی ہو جائے تو ڈاکٹر سے پہلے سول کپڑوں میں پولیس پہنچ جاتی ہے۔ نام پتا لکھ کر وہ چلے جاتے ہیں لیکن جب زخمی ٹھیک ہو جاتا ہے تو اُسے طلب کیا جاتا ہے۔


Latest News
Hashtags:   

کشمیری

 | 

ڈائری

 | 

کبوتر

 | 

پہنچا

 | 

دے۔۔۔

 | 
Most Popular (6 hours)

Most Popular (24 hours)

Most Popular (a week)

Sources